Contact Us

پی ٹی آئی کے مرکزی ترجمان رؤف حسن ’قاتلانہ‘ حملے میں زخمی

PTI spokesperson Raoof Hasan injured in Islamabad attack


اسلام آباد:  وفاقی دار الحکومت میں خواجہ سراؤں نے حملہ کر کے پاکستان تحریک انصاف کے ترجمان رؤف حسن کو زخمی کر دیا۔   رؤف حسن جی سیون مرکز میں نجی ٹی وی چینل کے دفتر سے نکلے تو باہر 4 خواجہ سراؤں نے ان پر حملہ کر دیا، عینی شاہدین کے مطابق حملہ آور 4 تھے، جنہوں نے  بلیڈ  سے رؤف حسن پر وار کیے۔  لوگوں کے جمع ہونے پر حملہ آور فرار ہوگئے، حملے میں ترجمان پی ٹی آئی کے چہرے پر زخم آئے ہیں۔  ترجمان اسلام آباد پولیس کے مطابق رؤف حسن کو نجی ٹی وی کے دفتر کے باہر بلیڈ مارا گیا ہے، پولیس نے موقع سے شواہد جمع کر لیے ہیں، جن خواجہ سراؤں نے یہ کام کیا ہے ان کے خلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔  سینیٹر شبلی فراز نے ایوان بالا میں اجلاس کے دوران اس واقعہ کا ذکر کیا اور بتایا کہ ہماری اور پاکستان کی سب سے بڑی پارٹی کے ترجمان رؤف حسن پر حملہ ہوا ہے، یہ سب قابل قبول نہیں ہے۔  انہوں نے کہا کہ افسوس حکومتی بنچوں سے رؤف حسن پر حملے پر زبانی احتجاج بھی نہیں کیا گیا، کیا حکومتی بنچز والے سینوں میں دل نہیں رکھتے، رؤف حسن پرحملہ کوئی عام واقعہ نہیں ہے۔  اس موقع پر فیصل واوڈا نے رؤف حسن پر حملے کی مذمت کی، شیری رحمان نے کہا کہ اگر سینیٹ نے واقعے کی مذمت کی تو اچھی بات ہے۔  ایس ایس پی آپریشنز اسلام آباد پولیس کا رؤف حسن سے رابطہ ہوا واقعہ کے حوالے سے معلومات لیں، ایس پی سٹی بھی موقع پر پہنچ گئے۔  رؤف حسن نے حملے کے بعد اپنے ابتدائی موقف میں کہا کہ میں پروگرام کے بعد واپس جا رہا تھا، چار لوگوں نے مجھ پر حملہ کیا، میرے منہ پر بلیڈ جیسے تیز دھار آلے سے کٹ لگا ہے۔

مزید پڑھیں